Sardar Zubair

اٹهارہ سو گیارہ دن

Political

عمران خان نے کے پی کے میں کیا کر لیا ، یہ بات آپ ہر اس آدمی سے سنیں گے جس کو عمران خان سے سیاسی اختلاف ہے یا پھر ذاتی عناد اور بغض ہے .دہشت گردی سے سب سے زیادہ متاثر یہی صوبہ تھا اور ہر لحاظ سے باقی صوبوں سے پیچھے تھا پی ٹی آئی کی حکومت جو موٹی موٹی تبدیلی لائی ہے وہ کچھ یوں ہے نمبر ١پولیس کو غیر سیاسی کیا ، میرٹ پر بھرتیاں کیں ، نئی فورس بنائی اور عملی طور پر تھانہ کلچر کو تبدیل کیا دشت گردی کو ختم کیا صوبے کا امن پاک فوج کے ساتھ مل کر بحال کیا. نمبر ٢ پٹواری سسٹم کو بہتر کیا، کمپیوٹرائزڈ کیا، رشوت کو ختم کیا جس کی گواہی عمر چیمہ جیسے عمران خان کے مخالف صحافی بھی دے چکے اب کوئی پٹواری پیسے لے کر ایک انچ زمین آگے پیچھے نہیں کر سکتا. نمبر ٣ عدل کے نظام کو بہتر کیا، آن لائن ایپلیکیشن کے ذریعے کسی بھی ڈیپارٹمنٹ کے خلاف آپ شکایت کر سکتے ہیں جس کا فیڈ بیک بھی آن لائن چیک کیا جا سکتا ہے. نمبر ٤ صحت کے میدان میں بیشمار کام ہوے، نۓ ہسپتال بنے ، پرانے ہسپتالوں کی کو بہتر کیا، انصاف کارڈ کا اجراہ، پولیو کے خلاف کامیابی حاصل کی جدید طرز کے ہسپتال بنائے اور ڈاکٹرز کی دستیابی کو ہر ممکن یقنینی بنانے کے لیئے بایو مٹیرک سسٹم متحارف کروایا تعلیمی اصلاحات کیں ، 605 استادوں کے خلاف ایکشن لیا، 62 کو فائرکیا ، نئے اسکول بناے، سکولوں میں پانی کا انتظام ، چار دیواری کو یقینی بنایا ، حاضری کو بہتر بنانے کے لیے بایو مٹیرک سسٹم پر کام ہو رہا ایک تعلیمی نظام، ایک سیلبس سکولوں میں ناظرہ اور اسلامی تعلیم کو یقنی بنایا سروے کے مطابق 80 فیصد امپروومنٹ ہوئی ہے، کھیلوں کے میدان بنے
عورتوں ، اقلیتوں کے لیئے قانون بنائے ، ایک ارب پودے لگائے،احتساب کمشن بنالئ 356 Micro-hydel پروجیکٹس،RIGHT TO INFORMATION، RIGHT TO SERVICES، CONFLICT OF INTEREST بل، وی آئی پی کلچر کا خاتمہ کیا، ٹرانسپورٹ کے نظام کو بہتر کیا، ٹریفک پولیس کو فحال کیا. پشاور ریپڈ بس پر کا م تیزی سے جاری ہے ، ایبٹ آباد کے لیے پنک بسوں کی منظوری دی اور شوکت خانم کینسر ہسپتال بنایا کرپشن پر اپنے ہی 20 ایم پی ایز کو فارغ کیا جوسیاسی طور پر ناتجربہ کار تھے ، کم وسائل کے باوجود اتنے قلیل عرصے میں اتنا کام کسی دوسری حکومت نے نہیں کیا اور پھر کہتے ہیں عمران خان نے کے پی کے میں کیا کر لیا

 

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *